جامعہ عربیہ مخزن العلوم والفیوض عیدگاہ خان پور

تعارف جامعہ عربیہ مخزن العلوم والفیوض عیدگاہ خان پور

مولانا شبیر احمد عثمانی فاضل جامعہ ھذا

علماء دیوبند نے انتہائی کٹھن حالات میں دین اسلام کی خدمت اور حفاظت کا فریضہ سر انجام دیا،بلا شبہ بر صغیر پاک وہند کی حد تک یہ بات سولہ آنے درست ہے کہ اگر اسباب کے درجے میں علماء دیوبند کا وجود نہ ہوتاتو ہند وستانکی سر زمین نہ جانے کب سے اندلس ثانی کا روپ دھار لیتی اور دہلی کی جامع مسجد آج اہل اسلام کے سجدوں سے آباد ہونے کی بجائے جامع قرطبہ کا منظر پیش کر رہی ہوتی اور دہلی ،ممبئی اور کلکتہ ،قرطبہ،غرناطہ اور اشبیلیہ کی طرح مسلمان کے وجود کو ترس رہے ہوتے۔

اخلاص و تقوٰی،عجزو انکساری ،خدمت خلق وتعلق حق،ذوق علم و کیف عشق اور خوف خدا وعشق مصطفٰی کی ان عظیم ہستیوں میں ایک ہستی حافظ القرآن و الحدیث حضرت مولانا محمد عبد اﷲ درخواستی نے خان پور کے شہر میں جامعہ عربیہ مخزن العلوم کی بنیاد رکھی جس کے علم و فیض سے قرب وجوار کے لوگوں نے علمی و روحانی جلا پائی۔

ذیل میں مختصرا جامعہ ہذا کا تعارف پیش خدمت ہے۔

تاریخ تا سیس

شیخ الاسلام حافظ القرآن و الحدیث حضرت مولانا محمد عبد اﷲ درخواستی نے حضرت دین پوری کے حکم سے ١٣٥٤ھ میں مخزن العلوم والفیوض کے نام پر اپنے گائوں درخواست میں مدرسہ کی بنیاد رکھی۔پھر حضرت دین پوری کے حکم سے ١٣٦٦ھ سے شاہی مسجد عید گاہ خان پور شہر میں مدرسہ منتقل کر دیا،جہاں یہ مدرسہ ٧٥ سال سے بے لوث دینی خدمات سر انجام دے رہا ہے۔

تعارف بانی جامعہ ہذا

جامعہ ہذا کے بانی ”شیخ الاسلام حافظ القرآن و الحدیث حضرت مولانا محمد عبد اﷲ درخواستی ”ہیں۔ آپ محرم الحرام ١٣۱۳ھ بمطابق 1897ء بروز جمعةالمبارک بستی درخواست ضلع رحیم یار خان میں پیدا ہوئے ۔ گیارہ سال کی عمر میں والد ماجد سے قرآن مجید حفظ کیا۔ عربی اور فارسی کی تعلیم مولانا عبدالغفور حاجی پوری اور مولانا محمد صدیق سے حاصل کی ۔ پھر اٹھارہ سال کی عمر میں دورئہ حدیث بھی مولانا محمد صدیق ہی سے پڑھ کر سند فراغت حاصل کی ۔ حضرت درخواستی کو یہ شرف حاصل ہے کہ آپ کی دستار بندی آپ کے پیرومرشد اور شیخ حضرت دینپوری نے خود فرمائی۔اپنی دستار مبارک آپ کے سر پر رکھ کر تعلیم وتدریس کا حکم فرمایا۔

عجیب حافظہ : اللہ تعالیٰ نے آپ کو بلا کا حافظہ عطا فرمایا تھا کہ بقول بعض علماء آپ کو تیس ہزار سے زائد احادیث سند سمیت ازبر تھیں اور بقول بعض اس سے بھی زیادہ۔ علامہ محمد انور شاہ کشمیری جب مقدمہ بہاولپور کے لئے ریاست بہاولپور تشریف لائے تو آپ کو حافظ الحدیث کا لقب عطا فرمایا۔

درس وتدریس : آپ اسلاف کی تمام خوبیاں اپنے اندر سموئے ہوئے تھے آپ کا طریق تفسیر حجةالاسلام حضرت شاہ ولی اللہ محدث دہلوی کی یاد دلاتا تھا۔ ہر سال شعبان و رمضان میں دورہ تفسیر پڑھاتے رہے جس سے تقریبا پچاس ہزار علماء و فضلاء نے کسب فیض کیا ۔

تصانیف: آپ نے کئی رسالے بھی تحریر فرمائے جن میں مقدمة القرآن،تفسیر سورت فاتحہ، فیضان رحمت ، فضائل ذکر، اسوہ حسنہ وغیرہ شامل ہیں۔

اہم کارنامے: آپ نے پاکستانی سیاست میں بے مثال قائدانہ کردار ادا کیا اور عرصہ دراز تک جمعیت علماء اسلام کے سرپرست رہے۔ قادیانیوں کے خلاف چلنے والی تحریک ختم نبوت ١٩٧٤ء اور تحریک نظام مصطفیٰ ١٩٧٧ء میں جمعیت علماء اسلام ملکی سطح پر پیش پیش رہی جس میں ملک کے بڑے بڑے علماء کرام نے آپ کی امارت میں کام کیا۔

وفات : طویل علالت کے بعد ٦ ربیع الاول ١٤١٥ھ بمطابق ٢٨ اگست ١٩٩٤ء صبح ٦ بجے اپنے خالق حقیقی سے جا ملے اور درگاہ عالیہ دین پور شریف کے قبرستان کے خاص احاطہ میں مدفون ہوئے۔ انا للہ و انا الیہ راجعون

جامعہ مخزن العلوم کا شرف

جامعہ عربیہ مخزن العلوم والفیوض کویہ شرف حاصل ہے کہ اکابر علماء سے اسے گہرا تعلق رہا ہے جن میں قطب الاقطاب حضرت خلیفہ غلام محمد دین پوری ،شیخ العرب والعجم حضرت مولانا سید حسین احمد مدنی ،حضرت مولانا تاج محمود امروٹی ،امیر شریعت سید عطاء اﷲشاہ بخاری ،حضرت مولانا احمد علی لاہوری ،حضرت مولانا محمد یوسف بنوری ،حضرت مولانا قاری محمد طیب ،حضرت مولانا حماداﷲ ہالیجوی ،حضرت مولاناحبیب اﷲ گمانوی ،حضرت مولانا خیر محمد جالندھری ،حضرت مولانا خیر محمد مکی ،حضرت مولانا منظور احمد نعمانی وغیرہ شامل ہیں ۔حالیہ سرپرستی حافظ الحدیث حضرت درخواستی کے جانشین حضرت مولانا فداء الرحمٰن درخواستی مد ظلہ فرما رہے ہیں۔

حضرت مولانا فضل الرحمٰن درخواستی صاحب مد ظلہ جامعہ ہذٰا کے حالیہ مہتمم ہیں۔ آپ نے حضرت درخواستی کی خدمت میں رہ کر علوم ظاہری و باطنی حاصل کیے۔فراغت کے بعد ١٩٨٤ء میں جامعہ ہٰذا کے ناظم اعلٰی واستاذ مقرر ہوئے۔ ١٩٩٤ء میں حضرت درخواستی نے خود جامعہ کے اہتمام کی ذمہ داری آپ کو سونپ دی جو آپ تا حال بخوبی سر انجام دے رہے ہیں۔

حضرت مولانا مطیع الرحمٰن درخواستی صاحب مد ظلہ ١٩٧٣ء میں جامعہ ہٰذا کے نائب مہتمم مقرر ہوئے اور تا حال اسی عہدے پر رونق افروز ہیں۔جامعہ کے نظم و نسق اور تبلیغی و سیاسی مہمات میں ان کی محنت کا بڑا دخل ہے۔آپ امن پسند شخصیت کے مالک ہیں اور ہمدرد قوم کے خطاب سے مشہور ہیں ،مجلس شورٰی جمعیت علماء اسلام کے رکن ہیں۔

حضرت مولانا عبدالرحمٰن جامی درخواستی صاحب مدرسہ ام حبیبہ للبناتؓ کے منتظم ہیں۔

حضرت مولانا جمیل الرحمٰن درخواستی صاحب مدظلہ جامعہ ہٰذا کے ناظم اعلیٰ ہیں۔ آپ حضرت درخواستی کی حیات سے ہی جمعیت علماء اسلام سے وابستہ ہیں اور حالاً جمعیت علماء اسلام کی مجلس شوریٰ کے ممبراور پنجاب کے نائب امیر ہیں آپ پاکستان میں اسلامی نظام کے نفاذ کے سرگرم داعی ہیں ۔

حضرت مولانا خلیل الرحمٰن درخواستی ناظم تعلیمات جامعہ ھذا ، سیکرٹری جنرل عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت خانپور، سیکرٹری جنرل جمعیت علماء اسلام رحیم یار خان، مسئول وفاق المدارس العربیہ ضلع رحیم یار خان، ڈپٹی سیکرٹری جنرل درخواستی ٹرسٹ انٹرنیشنل ہیں۔

جامعہ مخزن العلوم حال کے تناظر میں

جامعہ ہٰذا میں اس وقت تقریبا٣٥ اساتذہ کرام و معلمات ،٧٠٠ طلباء وطالبات مصروف تعلیم و تعلم ہیں۔جامعہ کی زیر سر پرستی کئی شاخیں قرب وجوار میں کام کر رہی ہیں جن میں طلباء و اساتذہ کی تعداد مندر جہ بالا تعداد کے علاوہ ہے۔

مخزن العلوم کا مقصد اورنصاب تعلیم

جامعہ خالصة مذہبی ادارہ ہے۔اس کا مقصد قرآن و حدیث ،عقائد اہل السنت و الجماعت،فقہ حنفی مع علوم الٰہیہ ،فتوٰی نویسی ،اخلاق ظا ہری و باطنی کی تربیت اور اصلاح و حفاطت ہے ۔ جامعہ کا نصاب تعلیم درس نظامی وفاق المدارس العربیہ کے مطابق ہے۔

جامعہ کے شعبہ جات

دین اسلام کی ترویج ،اشاعت اور حفاظت کے لیے جامعہ مخزن العلوم میں مختلف شعبہ جات مصروف عمل ہیں۔

شعبہ اہتمام

شعبہ نشر واشاعت

شعبہ مالیات و حسابات

شعبہ مطبخ

شعبہ خدمت خلق

شعبہ تعلیمات

شعبہ تحفیظ القرآن و تجوید

شعبہ درجات عربیہ

مکمل درسِ نظامی للبنین و البنات

تخصص فی الافتائ

شعبہ کمپیوٹر

شعبہ امتحانات

شعبہ دارالاقامہ

شعبہ دارالافتائ

شعبہ تحقیق و تبلیغ

دورہ تفسیر القرآن

تکمیلات

جامعہ کے ماہانہ اخراجات

بجلی و گیس100000

 

اساتذہ و عملہ کی تنخواہیں230000

مطبخ200000

وظائف طلبہ80000

ٹیلیفون و متفرق15000

انعامات کتب و علاج30000

سٹیشنری و طباعت5000

ٹرانسپورٹ و سفر خرچ5000

جبکہ جدید تعمیرات پر سالانہ تقریبا پچیس لاکھ روپے خرچ ہو رہے ہیں

شعبہ نشر واشاعت

حضرت قاری عزیز الرحمٰن درخواستی مد ظلہ اس شعبہ کے ناظم ہیں۔ وقتا فوقتا دلکش چارٹ،دعائیں، دیگر معلوماتی مضامین، پمفلٹ،کتابچے اور سہ ماہی المخزن اس شعبہ کے تحت شائع ہوتے ہیں نیزعنقریب انشاء اللہ خطبات و ملفوظات حافظ الحدیث کتابی اور آڈیو سی ڈیز کی شکل میں زیور طباعت سے آراستہ ہونگیں ۔

Related posts

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *