پاکستان ایکسپریس کے مسافروں کا احتجاج ،پولیس کا مسافروں پرتشدد خواتین سے بدتمیزی، کئی مسافر گرفتار

11-8-12train

 

 

پاکستان ایکسپریس کے مسافروں کا احتجاج ،پولیس کا مسافروں پرتشدد خواتین سے بدتمیزی، کئی مسافر گرفتار

 

خان پور (فیاض بلوچ سے ) فیصل آباد سے کراچی جانے والی پاکستان ایکسپریس دس گھنٹے لیٹ ہونے کے بعد خان پور اسٹیشن پر انجن فیل ہونے کی وجہ سے رک گئی مسافروں کا احتجاج انجن کے آگے لیٹ گئے انجن پرپتھراؤ ریلوے پولیس کا مظاہرین پر بہیمانہ تشدد ،حیدر آباد اور کراچی جانے والے مسافروں کو گرفتار کرکے ان کا سامان اتار لیا ملزمان کے ہمراہ عورتوں اور بچوں کا ریلوے تھانہ کے اندر احتجاجی مظاہرہ اور دھرنا پولیس کے خلاف نعرہ بازی مسلم لیگ (ن) پیپلزپارٹی تحریک انصاف اور سوسائٹی فار ہیومن رائٹس سمیت دیگر شہری کثیر تعدا د میں مظاہرین کو چھوڑوانے ریلوے تھانہ پہنچ گئے سیاسی رہنماوں کی ایس ایچ او کے ساتھ تشدید چپقلش ،پولیس کا مسافروں کے خلاف مقدمہ درج کرکے کاروائی شروع کردی ۔تفصیل کے مطابق فیصل آباد سے کراچی جانے والی پاکستان ایکسپریس دس گھنٹے لیٹ خان پور پہنچی او رگھنٹوں روکی رہی مسافروں کے پوچھنے پر کہاکہ انجن فیل ہوچکاہے جس پر مسافروں نے احتجاج شروع کردیا اور انجن کے سامنے لائن پر لیٹ گئے ریلوے پولیس کو آتا دیکھ کر پتھراؤ شروع کردیا جس کے بعد پولیس نے مسافروں پر لاٹھی چارج شروع کردی اور ٹرین کے ڈبوں کے اندر سے مسافروں کو گھسیٹ کر باہر نکالا اور ڈرائیور محمد صدیق کی نشاندہی پر گرفتار کرکے سامان پلیٹ فارم پر پھینک دیا اور ملزمان کو تھانہ لے آئے ملزمان کے ہمراہ عورتوں اور بچوں کو بھی اتارا گیا عورتوں اور بچوں کے واویلا کرنے پرمسلم لیگ (ن) کے سلیمان نواز ،جنید چوہدری ،انوار رضا ،احسن سیال ،پیپلزپارٹی کے رہنما راشد عزیز بھٹہ ،جواد خان ،سیف عزیز ،اور تحریک انصاف کے رہنما بلال حیدر ساہی ،غلام یٰسین عباسی ایڈووکیٹ اور سوسائٹی فار ہومن رائٹس کے سابق تحصیل صدر انور خان عباسی ڈاکٹر امین صابر اور دیگر شہری وفود کی شکل میں ریلوے تھانہ پہنچ گئے اور ایس ایچ او سے مسافروں سے رہا کرنے کا مطالبہ کیا اور ایس ایچ او کے انکار پر مسافر خواتین بچوں کے ہمراہ تھانہ ریلوے کے اندر دھرنا دیا اور ظالم پولیس افسران کے خلاف نعرہ بازی کی اس دوران مسافر خواتین نے صحافیوں کوبتایا کہ پولیس اہلکاروں نے ہمارے سامنے مسافروں پر تشدد کیا اور ہمیں دھکے دے کر تھانہ لے آئے اب ہمارے ساتھ بدتمیزی کی جارہی ہے ہمارا سامان اور چھوٹے بچے ٹرین میں ہی رہ گئے ہیں ہمارے ساتھ سفر میں ظلم کیا گیاہے اس دوران سوسائٹی فار ہیومن رائٹس کے انور عباسی مسافر عورتوں اور بچوں کو دودھ اور پانی کی بوتلیں لاکر دیتے رہے خان پور کے شہریوں اور مسافر خواتین نے دیگر ٹرینوںکو روک کردھرن بھی دیا ۔لیکن اس دورا ن پولیس نے مسافر ملزمان کو جوڈیشنل ریمانڈ کے لئے عدالت روانہ کردیا شہریوں کی بڑی تعداد عدالت پہنچ گئی جہاں پر عدالت عالیہ نے ملزمان کی درخواست ضمانت منظور کرتے ہوئے ضمانت لے لی مسافر ملزمان میں کراچی کے عبدالمجید ،محمد اصغر  اور حیدر آباد کے عقیل احمد اور راحت علی شامل تھے ۔

 

Related posts

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *