خان پور کے عوام آرسینک ،فنگس اور دیگر ڈیزاولڈ ملاپانی پی کر خطرناک اور جان لیوا بیماریوں کا شکار ہونے لگے

11-11-12pani1

 

خان پور(خواجہ محمد زبیر سے ) خان پور کے عوام آرسینک ،فنگس اور دیگر ڈیزاولڈ ملاپانی پی کر خطرناک اور جان لیوا بیماریوں کا شکار ہونے لگے فلٹر تبدیل نہ ہونے کی وجہ سے شہر میں نسب 2بڑے فلٹریشن پلانٹ نے بھی کا م چھوڑ دیا ،پلانٹس سے فراہم کیا جانے والا پانی روٹین کے پانی سے بھی خطرناک بن گیا شہر کے مختلف علاقوں سے پانی کے نمونے لے کر چیک کیا گیا تو پتہ چلا کہ خان پور میں ٹی ڈی ایس لیول 4سو سے لیکر 25سو تک ہے جبکہ پراسپٹیٹ کرنے سے پانی میں آرسینک ،فنگس اور دیگر خطرناک ڈیزاولڈ سامنے آئے اس طرح شہری زیر زمین پانی پی کر ہیپاٹائٹس سمیت دیگر خطرناک اور جان لیوا بیماریوں میں مبتلا ہورہے ہیں عوام کو صاف اور صحت افزا پانی فراہم کرنے کی خاطر ٹی ایچ کیو میں آرمی کی طرف سے ایک بڑا فلٹریشن پلانٹ جبکہ ماڈل ٹاون میں خلیفہ بن زید النہان فاونڈیشن (انسانی امدادی کاروائی ) کی جانب سے ایک بڑافلٹریشن پلانٹ نصب کیا گیا ان فلٹریشن پلانٹ کے فلٹر کی تبدیلی تحصیل میونسپل ایڈمنسٹریشن کی ذمہ داری تھی اور ٹی ایم اے نے روایتی نااہلی کا مظاہرہ کرتے ہوئے فلٹر تبدیل نہیں کروائے جس کی وجہ سے ان پلانٹ سے پانی  مزید خراب ہوکر عوام کو مل رہاہے سماجی تنظیم اجالا کے صدر محمد اشرف مغل نے فلٹریشن پلانٹس پر ٹی ڈی ایس لیول صحافیوں کو چیک کروایا اور کہاکہ ٹی ایم اے خان پور  نے چونکہ عوام کو صحت افزائی دینے کی بجائے گندگی دینے کا عزم کررکھا ہے بلکہ ان پلانٹ کے فلٹر تبدیل نہ کرکے بھی ٹی ایم اے کی جانب سے عوام کے ساتھ دھوکہ کیا جارہاہے لوگ دوردراز سے سفر کرکے اور وسائل خرچ کرکے فلٹریشن پلانٹ سے پانی بھرتے ہیںلیکن ان کو پانی صاف نصیب نہیں ہوتا اسسٹنٹ کمشنر وایڈمنسٹریٹر ٹی ایم اے سمیرا ربانی اور ٹی ایم او اعجاز عتیق گوندل کو کئی بار آگاہ کرکے فلٹر تبدیل کرنے کی استدعا کی گئی ہے لیکن وہ مسلسل خواب خرگوشاں کا شکار ہیں انہوں نے ڈی سی او رحیم یار خان نبیل احمد جاوید اور خلیفہ بن زیدالنہان فاونڈیشن کے ذمہ داران سے مطالبہ کیاہے کہ فوری طور پر ٹی ایم اے کو پابند کرکے فلٹر تبدیل کروائے جائیں ۔

Related posts

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *