آستانہ یار شاہ کے متولی سید ذوالقرنین رضا کاظمی کا لائسنس نہ ملنےپرانتظامیہ کے خلاف احتجاج

18-11-12kazmi

 

آستانہ یار شاہ کے متولی سید ذوالقرنین رضا کاظمی کا لائسنس نہ ملنےپرانتظامیہ کے خلاف  احتجاج

خان پور (نمائندہ خصوصی)آستانہ یار شاہ کے متولی سید ذوالقرنین رضا کاظمی نے اپنے 5بچوں 14سالہ رجب شاہ 12سالہ شفقت حسین 8سالہ سید ثقلین شاہ 5سالہ علمدار شاہ 4سالہ یار شاہ ودیگر درجنوں افراد کے ہمراہ آستانہ یارشاہ سے ایک احتجاجی جلوس نکالا ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر سہیل ظفرچٹھہ اور ایس ایچ او سٹی اظہر جاوید کے خلاف لائسنس نمبر 18میں بطور وارث لائسنس دار ایک فریق جاوید شاہ کا نام درج کیاگیا لیکن دوسرے فریق سید ذوالقرنین کاظمی کا نام درج نہ کیا گیا اور مذہبی عبادات پر پابندی لگائی گئی جسکے خلاف احتجاجی ریلی بلدیہ چوک تک نکالی گئی جہاں دونوں سٹرکوں کے درمیان اپنے بچوں کے ہمراہ احتجاجی مظاہرہ کیا اور دھرنا دیا مظاہرین نے ڈی پی او سہیل ظفرچٹھہ کے خلاف بینرز اٹھا رکھے تھے مظاہرین نے ڈی پی او سہیل ظفر چٹھہ مردہ باد اور ڈسٹرکٹ پولیس مردہ باد کے نعرے لگائے احتجاجی دھرنا سے خطاب کرتے ہوئے سید ذوالقرنین کاظمی نے کہاکہ ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر سہیل ظفرچٹھہ نے دوسری مرتبہ حق تلفی کی ہے اور درخواست دینے کے باوجود چند بااثر افراد کے کہنے پر میرانام لائسنس نمبر 18تعزیہ یار شاہ کے لائسنس میں بطور لائسنس دار اور بطور منتظم متولی میرانام نہیں ڈالا بلکہ ایک دوسرے شخص ”جاوید حسین” کا نام یکطرفہ طور پر ڈال دیا گیاہے اب میرے گھر سے شبہیہ نکالنے پر پابندی ہے ہمیں مذہبی آزادی سے روکا جارہاہے انہوں نے کہاکہ جب تک انتظامیہ ہمارا مسئلہ حل نہیں کرتی مسلسل دھرنا واحتجاج جاری رکھیں گے اس دوران شیعہ مسلک کے دیگر افراد بھی آگئے مقامی پولیس کے تھانیدار جام محمد اعظم ایس آئی بھی بھاری نفری کے ہمراہ پہنچ گئے شیعہ مسلک کے رہنما سید عمران شاہ بھی پہنچ گئے جنہوں نے مظاہرین سے مذاکرات کئے اور کہاکہ ہم آپکا مسئلہ حل کردیں گے آپ احتجاج کو ختم کریں سید ذوالقرنین کاظمی نے بتایا کہ میں 2سال سے ڈی پی او آفس کے چکر لگا رہاہوں لیکن مقامی پولیس ہمارے خاندان کو آپس میں لڑا رہی ہے اور تماشہ دیکھ رہی ہے میرا حق مارا جارہاہے اور مجھے حق مانگے سے بھی روکا جارہاہے جس پر سید عمران شاہ نے وعدہ کیا کہ ہم آپ کا نام لائسنس میں درج کرادیتے ہیں جس پر انہوں نے احتجا ج ختم کردیا سید عمران شاہ نے اس موقع پر موقف دیتے ہوئے کہاکہ لائسنس میں واقعی ذوالقرنین رضا کاظمی کا نام اندارج کرنا چاہئے جسکی ہم تائید کرتے ہیں اسے حق ملنا چاہئے اس موقع پر اگر گرفتاری عمل میںلائی گئی تو وہ ناکام ہوگی ۔

Related posts

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *