رورل ہیلتھ سینٹر باغو بہار میں ڈاکٹر وعملہ کی عدم موجودگی کے خلاف اہل علاقہ کا احتجاجی مظاہرہ

16-02-2013crime1

 

خان پور(نمائندہ خصوصی)رورل ہیلتھ سینٹر باغو بہار میں ڈاکٹر وعملہ کی عدم موجودگی کے خلاف اہل علاقہ کا احتجاجی مظاہرہ،متاثرین کا ہسپتال عملہ پر ڈیوٹی کے وقت شراب وشباب کی محفلیں سجانے کا الزام۔ڈاکٹر وعملہ کی معطلی تک احتجاج جاری رکھنے کا فیصلہ۔گزشتہ دنوں باغوبہار کے نواحی چک 95ون ایل کے رہائشی محمد رمضان اور اسکی والدہ جب حادثے میں شدید زخمی حالت میں شام چھ بجے رورل ہیلتھ سینٹر باغو بہار میں طبی امداد کے حصول کیلئے گئے تو وہاں ہسپتال کے شعبہ حادثات میں کوئی عملہ موجود نہ تھا جبکہ ڈاکٹر بھی اپنی سیٹ پر موجود نہ ہونے کی وجہ سے جب زخمیوں کے ورثاء محمد عاشق اور محمد جمیل نے انکے بارے معلومات لی تو علم ہوا کہ ہسپتال کے ڈسپنسر محمد اخلاق سمیت تمام عملہ ہسپتال کے ایک رہائشی کمرہ میں شراب وشباب کی محفل میں مشغول ہیںجب وہ وہاں انکوزخمیوں کو طبی امداد کیلئے بلانے کیلئے گئے تو وہاں تمام عملہ شراب کے نشہ میں دھت غل غپاڑہ میںمصروف تھا جس نے محمد عاشق اور جمیل کوبغیر زخمیوں کو طبی امداد دئے غلیظ گالی گلوچ کرنے کے بعد بھگا دیا۔جس کے پیش نظر علاقہ کے مکینوں محمد لطیف،محمد راشد،محمد جمیل،محمد لقمان،محمد رمضان،غلام محمد،محمد یا سین،محمد امین،جام سلیم،جام شعبان،بشیر احمد،نذیر احمد،فیض اللہ،محمد حنیف،محمد لطیف،ڈھول خان،عزیز احمد،ماسٹر اعجازودیگر درجنوں اہل علاقہ نے رورل ہیلتھ سینٹر باغو بہار کے ڈاکٹڑ وعملہ کو نا اہل اور کرپٹ قرار دیتے ہوئے انکے خلاف شدید احتجاجی مظاہرہ کیا اور ڈیوٹی کے اوقات میں شراب نوشی کرنیوالے عملہ کی فوری موطلی کا مطالبہ کرتے ہوئے مظاہریں نے یہ بھی دھمکی دی کہ نا اہل ڈاکٹر اور ڈسپنسر سمیت دیگر تمام عملہ کی معطلی تک احتجاج کا سلسلہ جاری رکھیں گے۔موقف دریافت کرنے پر ہسپتال کے انچارج ڈاکٹر ارشاد ندیم نے کہا کہ یہ بات درست ہے کہ جب یہ زخمی ہسپتال آئے تو ہسپتال میں کوئی موجود نہ تھا اور اس معاملہ کی انکوائری کررہا ہوں۔

Related posts

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *