سکول کی بجائے بھینسوں اور مویشیوں کا بھانہ دوسری جگہ زمیندار کا ذاتی ڈیرہ قائم

09-03-20213school1

 

خان پور ( نامہ نگار) سپریم کورٹ آف پاکستان کے حکم پر سول ججز نے علاقائی سکولوں کو محکمہ تعلیم اور ریونیوسمیت دیگر عملہ کے ساتھ چیک کرنے کا سلسلہ شروع کررکھا ہے اسی چیکنگ کے دوران گذشتہ روز خان پور کے سول جج علاقہ مجسٹریٹ قیصر مختار نے اپنے عملہ محمد عارف سٹینو اور دیگر کے ساتھ اچانک گورئمنٹ گرلز پرائمری سکول دنیا پور کا دورہ کیا تو وہاں سکول کی بجائے بھینسوںاور مویشیوں کا بھانہ قائم تھا جبکہ سکول کی عمارت تو موجود ہے مگریہاں آج تک کوئی طالب علم پڑھنے کے لئے نہیں آیا اس سلسلہ میں سول جج علاقہ مجسٹریٹ کی ٹیم نے میڈیا کو بتایا کہ سکول کی جگہ زمیندار کا ذاتی ڈیرہ بنا ہوا ہے جبکہ یہ سکول اپنی اصل جگہ کی بجائے چک 66/Pمیں ایک پٹواری خانہ میں چل رہاہے اس ٹیم  نے دوسری کاروائی کرتے ہوئے گورئمنٹ ایلیمنٹری سکول چک 66/Pکا دورہ کیا تو 16کنال اراضی پر موجود سکو ل میں صرف 12مرلے پر سکول کی عمارت بنی ہوئی ہے جبکہ سکول کی چار دیواری کے اندر 4کنال اراضی پر مقامی ہیڈماسٹر محمد ابراہیم نے گندم کی فصل کاشت کررکھی ہے اس گندم کی فصل کے لئے تمام محنت سکول کے طلباء سے بیگار لے کر کی جاتی ہے بتایا جاتا ہے کہ فصل کے ل ئے خان پو رمیں ایسے گھوسٹ سکولوں کی نشاندہی پر تمام ججز علاقہ مجسٹریٹ کاروائیاں کررہے ہیں جوکہ مکمل رپورٹ 13مارچ کو عدالت عظمی میں بھجواد ی جائے گی محکمہ تعلیم کے افسران ان سکولوں بارے ابھی تک کاروائی سے گریزاں ہے ۔۔

Related posts

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *