دیہاتی کے گھر گھس کر چادر چار دیوا ری کا تقدس پامال کر نیوالے سب انسپکٹر اور اے ایس آئی سمیت 8پولیس کے شیر جوانوں کے خلاف مقد مہ درج

31-05-2013crime1

 

خان پور ( نمائندہ خصوصی )دیہاتی کے گھر گھس کر چادر چار دیوا ری کا تقدس پامال کر نیوالے سب انسپکٹر اور اے ایس آئی سمیت 8پولیس کے شیر جوانوں کے خلاف مقد مہ درج ،پولیس کا ساتھ دینے والوں میں ایک خاتون سمیت 4دیگر افراد بھی شامل،واقعہ کے بعد 10جماعت کی طالبہ بھی لاپتہ،پولیس کی جانب سے متاثرہ خاندان کے ایک شخص کی گرفتاری اور خاندان پر کار سرکارع میں مدا خلت کا جھو ٹا مقدمہ درج کر نے پر متاثرین کا احتجاجی مظاہرہ۔ڈی پی او سے انصاف کی اپیل۔خان پور کے علا قہ نیو جیٹھہ بھٹہ میں تھا نہ سٹی کے سب انسپکٹر امجد دشتی اور اے ایس آئی میاں مشتاق احمدکی قیادت میں جب دیگر 6پولیس اہلکار اور 4دیگر لوگ محمد اکرم عرف گڈا،محمد افضل،محمد اختراور ریحانہ عرف رانی دیہاتی محمد جاوید کو اس کے خلاف تھا نہ سٹی میں درج چیک کے مقدمہ میں گرفتاری کے لئے جب انکے گھر دا خل ہوئے تو وہاں موجود خواتین جامل مائی،عظمیٰ بی بی،عقیلہ بی بی اورکریم بخش کو وحشیا نہ تشدد کا نشا نہ بنا نے کے بعد انہیں برہنہ کر دیا اور بالوں سے پکڑ کر گھسیٹتے رہے جبکہ جاتے ہوئے محمد جاوید کوموبائل وین میں بٹھا دیا اور تھا نہ سٹی میں لے جا کر پورے خاندان پر کار سر کار کاایک اور جھوٹ مقدمہ درج کر لیا جبکہ اس واقعہ کے بعد گھر موجود دسویں جماعت کی طالبہ جاوید کی بھتیجی لبنیٰ عظیم لاپتہ ہے ۔دوسری طرف پولیس تشددد سے زخمی ہونیوالی خواتین کی در خواست پر پولیس تھانہ صدر خان پور نے گھر گھس کر خواتین پر تشدد کر نیوالی پولیس پارٹی پر زیر دفعات452-324-145-149کے تحت مقد مہ درج کر لیا دوسری طرف متاثرہ خاندان پر پولیس تھانہ صدر کی جانب سے سب انسپکٹر امجد حسین دشتی کی مد عیت پرکار سرکار میں مدا خلت کے جھوٹے مقد مہ کے اندراج پر علاقہ کے مرد وخواتین بچل مائی،حلیمہ بی بی،عالم مائی،فر زانہ بی بی،پر وین بی بی،رحمت بی بی،نسیم بی بی جنت بی بی،زبیدہ بی بی،ملک عظیم بخش،غلام شبیر محمد عنایت،محمد بلال،وسیم،شکیل احمد،اقبال،عبد المالک،عبد الستار،زاہد حسین پر ویز،رمضان،اجمل،عالم ودیگر نے احتجاجی مظاہرہ کیا انکا مطالبہ تھا کہ ہمارے گھر گھس کر خواتین کو بر ہنہ کر کے تشدد کا نشا نہ بنانے والے پولیس اہلکاروں کو گرفتار کر کے ہمارے خلاف درج کار سرکار میں مدا خلت کا جھو ٹا مقد مہ خارج کیا جائے دیگر صورت احتجاج کا دائرہ وسیع کردیں گے۔

 

Related posts

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *