غریب خاندان کو علاج کے لئے سوسائٹی فار ہیومن رائٹس نے 20ہزار روپے کی امداد کردی

26-04-2014sos

 

خان پور (تحصیل رپورٹر )پر اسرار بیماری کا شکار ایک غریب خاندان سے تعلق رکھنے والی 3بہنیں اپنی بینائی کھو بیٹھیں والدین لاکھوں روپے کے علاج کرانے سے محروم سوسائٹی فار ہیومن رائیٹس کے ضلعی جنرل سیکرٹری نے 20ہزار روپے کی امداد کر دی وزیر اعلیٰ پنجاب سے غریب خاندان کی بینائی سے محروم 3بہنوں کے سرکاری علاج کا مطالبہ کر دیا اس سلسلہ میں بتایا گیا ہے کہ خان پور کے نواحی علاقہ دنیا پور کی بستی مومن آباد میں رہائش پذیر محنت کش عبدالغنی کے 5بچے ہیں جن میں سے 3بیٹیاں 15سالہ شازمہ ،12سالہ فاطمہ بی بی اور 17سالہ سمیرا بی بی گزشتہ کچھ سالوں کے دوران پر اسرار بیماری کے باعث اپنی آنکھوں کی بینائی کھو چکی ہیں تینوں بچیوں کی والدہ نذیراں بی بی نے سوسائٹی فار ہیومن رائیٹس کے ضلعی جنرل سیکرٹری ملک محمد فاروق طور کے ہمراہ صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ 3سال قبل ان کی بیٹیوں کو یہ بیماری لاحق ہو ئی پہلے 15سالہ شازمہ بی بی کی بینائی متاثر ہوئی جو کہ بالکل اندھی ہو گئی اس کے بعد 12سالہ فاطمہ بی بی 80فیصد تک اپنی بینائی کھو چکی ہے جبکہ 17سالہ سمیرا بی بی کی بھی 50فیصد سے زائد بینائی اب تک متاثر ہو چکی ہے بہاول پور تک آنکھوں کے ڈاکٹروں کو چیک کرانے کے علاوہ اپنی سطح پر علاج کی ہر ممکن کوشش کی مگر علاج مہنگا ہو نے کے باعث اب ان کے بس میں نہیں رہا اور نہ ہی حکومتی سطح پر ان کی کو ئی امداد ہو سکی ہے اس موقع پر ضلعی جنرل سیکرٹری سوسائٹی فار ہیو من رائیٹس ملک محمد فاروق طور نے اپنی طرف سے بینائی سے محروم خاندان کی تینوں بہنوں کے علاج معالجہ کے لیے 20ہزار روپے نقد امداد کی جبکہ انہوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب سے مطالبہ کیا کہ غریب خاندان سے تعلق رکھنے والی ان تینوں بہنوں کے سرکاری علاج کا بندوبست کرانے کے علاوہ اس خاندان کی معاونت کی جائے ۔

Related posts

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *